رمضان المبارک: ایس او پیز پر سختی سے عمل درآمد کرانے کا فیصلہ

[ad_1]

رمضان المبارک میں کورونا ایس او پیز پر سختی سے عمل درآمد کرانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیراسد عمر کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ کمیونٹی اور میڈیا کے ذریعے ماسک پہننے کی مہم چلائی جائے گی، تقریبات پر ان ڈور اور آؤٹ ڈور ہر طرح کی پابندی ہوگی۔

ذرائع کے مطابق بازار سحری سے شام 6 بجے تک کھلے رہیں گے۔ افطاری سے رات بارہ بجے تک باہر کھانے کی اجازت ہوگی۔ سماجی، سیاسی، کھیلوں سمیت ہر قسم کی تقریبات پر پابندی ہوگی۔

این سی او سی سربراہ اسد عمر نے کہاکہ لاک ڈاؤن کے دوران ایمرجنسی کے علاوہ غیر ضروری نقل و حرکت پر پابندی ہوگی۔

رمضان میں رش سے بچنے کے لئے اضافی ٹرینیں چلائی جائیں گی، بین الصوبائی ٹرانسپورٹ کا جائزہ لینے کے لیے اجلاس 20 اپریل کو ہوگا۔

وفاقی وزیر کا کہنا ہے کہ اندرون شہر ٹرانسپورٹ 50 فیصد مسافروں کے ساتھ چلے گی۔

نجی اور سرکاری دفاتر میں 50 فیصد ورک فرام ہوم پالیسی ہوگی، گلگت بلتستان، کے پی، آزاد کشمیر میں سیاحت کے لیے سخت ایس او پیز ہوں گے، مختلف جگہوں پر ٹیسٹنگ پوائنٹ بنائے جائیں گے، ریلوے کو 70 فیصد مسافروں کے ساتھ چلایا جائے گا۔

کھیلوں اور ثقافتی میلوں سمیت دیگر تقریبات پر مکمل پابندی ہوگی۔

بین الصوبائی ٹرانسپورٹ ہفتے میں 2 دن بند رہے گی۔

ٹیک اوے کی اجازت ہوگی۔

اسدعمر نے کہاکہ سینما گھر اور مزارات مکمل طور پر بند رہیں گے۔انتظامیہ ایس او پیز پر عملدرآمد کو یقینی بنائے۔

 

[ad_2]

Source link

Updated: اپریل 14, 2021 — 4:46 صبح

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

BFT News © 2022 Frontier Theme