عیسائی اکثریتی ملک میں پہلی خاتون مسلم صدر منتخب

تنزانیہ میں پہلی بار مسلم نائب صدر خاتون سامیہ حسن نے صدر کا عہدہ سنبھال لیا۔
عیسائی اکثریتی ملک تنزانیہ کے صدر جون ماغوفولی کی اچانک موت کے بعد ملک کی مسلم نائب صدر سامیہ حسن نے صدر پہلی خاتون صدر ہونے کی حیثیت سے حلف اُٹھایا۔ صدر جون ماغوفولی گزشتہ دنوں انتقال کرکے گئے تھے جس کے بعد نائب صدر سامیہ حسن ملک کی پہلی خاتون صدر بنیں۔
تنزانیہ کے آئین کے مطابق صدر کی موت کے بعد صدارت کی بقیہ مدت نائب صدر کو پوری کرنا ہوتی ہے۔ صدر جون گزشتہ برس اکتوبر میں دوسری بار صدر منتخب ہوئے تھے یعنی نائب صدر سامیہ 2025 تک ملک کی صدر رہیں گی۔
تنزانیہ کے صدر جون ماغوفولی 27 فروری سے منظرعام سے غائب تھے، عوامی سطح پر اُن کے کرونا میں مبتلا ہونے کی افواہیں زیر گردش تھیں تاہم حکومتی ترجمان کے مطابق صدر کو دل کا عارضہ لاحق تھا۔
سامیہ حسن نے اپنے صدارتی اعلان میں 22 اور 25مارچ کو عام تعطیل کا اعلان کیا ہے۔ جس میں سابق صدر کی آخری رسومات ادا کی جائیں گی۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

BFT News © 2022 Frontier Theme