بلدیاتی انتخابات: سندھ حکومت کيخلاف ازخود نوٹس کيس سماعت کيلئےمقرر

49

[ad_1]

فائل فوٹو

کراچی میں بلدیاتی انتخابات نہ کرانے پر الیکشن کمیشن نےسندھ حکومت کيخلاف ازخود نوٹس کيس سماعت کيلئےمقرر کرديا۔

اليکشن کميشن نےسندھ حکومت کےمؤقف کےخلاف ازخود نوٹس ليا تھا جبکہ کیس کی سماعت 6ستمبر کو ہوگی۔ الیکشن کمیشن نےسندھ حکومت کےنمائندوں کو سماعت پر طلب کرلیا ہے۔

اس سے قبل سندھ حکومت نے ریفرنس پر پارلیمنٹ کے فیصلے تک بلدیاتی الیکشن سے معذرت کی تھی۔

سندھ حکومت نے 23 اگست کو سندھ میں فوری طور پر بلدیاتی انتخابات کے انعقاد کو ناممکن قرار دیدیا تھا۔

ایڈمنسٹریٹر کراچی مرتضیٰ وہاب نے موقف اپنایا تھا کہ سندھ حکومت کو مردم شماری کےحتمی اعدادوشمار پر تحفظات ہیں۔

سندھ میں بلدیاتی انتخابات سےمتعلق تین روز قبل چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان کی سربراہی میں اجلاس ہوا تھا۔ جس میں ایڈمنسٹریٹر کراچی مرتضیٰ وہاب نے الیکشن کمیشن کو بریفنگ دیتے ہوئے کہا تھا کہ سندھ حکومت نےمشترکہ مفادات کونسل کے فیصلے پر اپیل دائر کی ہوئی ہے،اپیل پر فیصلے تک بلدیاتی انتخابات نہیں ہوسکتے۔

واضح رہے کہ سندھ کے بلدیاتی اداروں کی 30اگست 2020سے مدت مکمل ہوچکی ہے۔

اس سے پہلےوزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے سندھ میں سیاسی بنیادوں پر بلدیاتی انتخابات کرانے کا اعلان کیا تھا۔