فلسطین کےمعاملے پر مسلم امہ کو یکجا کرنے کی ضرورت ہے، شاہ محمودقریشی

[ad_1]

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ اسرائیل کی جانب سےالاقصیٰ مسجدمیں تشددکاسلسلہ جاری ہے اور نہتےنمازیوں پرفائرنگ قابل افسوس ہے۔

وزیر خارہ شہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ فلسطین کے معاملے پر مسلم امہ کو یکجا کرنے اور عالمی برادری کو اسرائیل کے تشدد کو روکنے کیلئے اپناکردار ادا کرنے کی ضرورت ہے۔

وزیر خارجہ نے کہس ہے کہ فلسطین کی صورتحال پرترکی کابھی ایک واضح موقف ہے اور  پاکستان کا مؤقف بھی دوٹوک ہے، پاکستان فلسطینی عوام کے ساتھ مکمل اظہار یکجہتی کا اظہار کرتا ہے۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ آرمی چیف جنرل باجوہ نے افغانستان کا دورہ کیا،ہم افغانستان میں امن کے خواہاں ہیں، ہم چاہتے تھے کہ افغانستان میں امن اور مفاہمت کا عمل آگے بڑھے اور افغان حکومت اور طالبان کے درمیان عید پر سیز فائر کا خیرمقدم کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا ہے کہ کابل میں اسکول پر حملہ انتہائی قابل مذمت ہے، ہم افغان بھائیوں کے ساتھ کھڑے ہیں، ہم امن، استحکام اور افغان بھائیوں کے شانہ بشانہ چلنا چاہتے ہیں ہم ان کے ساتھ کھڑے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم افغانوں کے باہمی مذاکرات سے افعان مسئلے کے سیاسی حل کے خواہشمند ہیں، انخلاء کا عمل شروع ہو چکا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ افغانستان میں قیام امن کی ذمہ داری افغان قیادت پر ہے، گفت و شنید سے معاملات طے کرنا طالبان اور حکومت دونوں کے اپنے مفاد میں ہے۔

وزیر خٓرجہ نے بتایا ہے کہ افغانستان میں قیام امن سے سب سے زیادہ پاکستان اور پھرپورا خطہ مستفید ہو گا، پاکستان خوشحال اور خودمختار افغانستان دیکھنا چاہتا ہے،امید ہے افغان عمل عمل آگے بڑھے گا۔


Double Click 970 x 90

[ad_2]

Source link

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

BFT News © 2022 Frontier Theme