سخت سیکیورٹی والے علاقے میں دہشت گردی کا واقعہ ہونا حکومتی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے، بلاول بھٹو

[ad_1]

پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری  نے کہا ہے کہ حساس اور سخت سیکیورٹی والے علاقے میں دہشت گردی کا واقعہ ہونا حکومتی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری  نے کوئٹہ میں سرینا ہوٹل کے قریب دھماکے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ رمضان کے مقدس مہینے میں کوئٹہ کو خون میں نہلانے کی کوشش کرنے والے انسانیت کے دشمن ہیں۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ کوئٹہ میں دوست ہمسائیہ ملک چین کے سفیر کی قیام گاہ کے قریب دھماکا ہونا ایک انتہائی تشویش ناک معاملہ ہے۔

انہوں نے بلوچستان حکومت سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ  زخمیوں کے فوری علاج معالجے کے لئے ہر ممکن کاوشیں بروئے کار لائی جائیں۔

چیئرمین بلاول بھٹو  نے کوئٹہ دھماکے میں جاں بحق ہونے والے افراد کے لواحقین سے گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔

چیئرمین بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ کوئٹہ دھماکے میں ملوث افراد کو گرفتار کرکے ان کو قرارواقعی سزا دی جائے۔

پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری  نے مزید کہا کہ نیشنل ایکشن پلان پر عملدرآمد نہ ہونے کی وجہ سے ملک میں تشدد، بدامنی، لاقانونیت، انتہا پسندی اور دہشت گردی کے واقعات میں اضافہ ہورہا ہے۔

[ad_2]

Source link

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

BFT News © 2022 Frontier Theme