آج ملک میں بچہ پیدا ہوتے ہی 2 لاکھ کا مقروض بن جاتا ہے، خورشید شاہ

[ad_1]

پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے سینئر رہنما اور قومی اسمبلی میں سابق اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ کا کہنا ہے کہ آج ملک میں ایک بچہ پیدا ہوتے ہی 2 لاکھ کا مقروض بن جاتا ہے۔

اپنے جاری کردہ بیان میں انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت 3 سال کے دوران 17 ہزار ارب لے رہی ہے، اس قرض کا بوجھ ملک کے ہر فرد پر پڑے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ  اس بات کو عوام سمجھ  جائے کہ ملک کے حالات کیا ہیں، اپوزیشن کو اپنی جگہ اور  حکومت کو اپنی جگہ مضبوط ہونا چاہیے۔

میں موجودہ حالات سے خوش نہیں ہوں، اگر ہم حکومت کو توڑتے ہیں تو ملک کونقصان ہوتا ہے۔

خورشید شاہ نے یہ بھی بتایا کہ ہمارے روابط ایران سے بھی خوش گوار نہیں ہیں ، میں نے سُنا ہے کہ چائنا بھی اپنی ناراضگیاں دکھا رہا ہے۔

پھر سوال یہ ہے کہ کہ آخر ہم کرکیا رہے ہیں۔

انہوں نے قرضوں سے متعلق بات کرتے ہوئے کہا کہ ہم  قرضوں میں ڈوب چکے ہیں ،  13 ارب ڈالر یہ حکومت قرضہ لے چکی ہے جبکہ موجودہ حکومت چار ارب ڈالر قرضہ اور لینے جارہی ہے مطلب 17 ارب ڈالر کا قرضہ لیا جائے گا۔

رہنما پی پی پی نے مزید کہا کہ ہمیں امریکہ ، کشمیر اور افغانستان   کے مسئلے کو بھی نظر انداز نہیں کرنا چاہیے۔

 

 

 

 

 


Adsense 300×250

تازہ ترین نیوز پڑہنے کے لیے ڈاؤن لوڈ کریں بول نیوزایپ

[ad_2]

Source link

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

BFT News © 2022 Frontier Theme